Black Mirror Have Eyes Season 2 by Wahiba Fatima Last Episode


Black Mirror Have Eyes Season 2 by Wahiba Fatima Online Urdu Novel Last Episode Posted on Novel Bank.

مایا وش کافی دیر سے اس دیو ہیکل وہیل فش پر بڑی شان سے براجمان تھی۔ جو اپنی ملکہ کو اس کی منزل تک پہنچانے کے لیے تیزی سے اس کی بتائی گئی سمت کی جانب تیر رہی تھی۔  

وہ اس سٹار فش کو فالو کر رہی تھی۔ صحیح سمت کی جانب جاتے ہی جو شائن کرنے لگتی۔ وہ وئیل چئیر ایک چھوٹے سے جزیرے کے کے پاس آ کر رکی تھی۔ 

مایا وش کو اندازہ ہو گیا کہ عائش اور روز اسی جزیرے پر ہیں۔ وہ اس وہیل فش کو پیار سے رب کرتی اسے یہیں ٹھہرنے کا حکم دیتی۔ خود اس پر سے اتر کر جزیرے کی جانب تیری تھی۔ 

ہلکا سا پانی سے نکل کر دیکھا تو بڑے بڑے آکٹوپس تھے جو ساحل پر پہرہ دے رہے تھے۔ وہ مسکرائی۔ اور اطمینان سے ساحل کی جانب آئی۔ وہ سکون سے پانی سے نکلی۔ 

وہ آکٹوپس اس کی جانب متوجہ ہو چکے تھے۔ تبھی اس پر حملہ کرنے کے لیے اس کی جانب بڑھے۔ مایا وش اطمینان سے کھڑی رہی۔ 

غیر معمولی ہلچل پر روز اور عائش بھی اس طرف متوجہ ہوئے تھے۔ اور سامنے اوشن کوئین کو دیکھ کر ان دونوں کو سکون آیا۔ 

منظر بدلا تھا وہ آکٹوپس جو مایا وش پر حملہ کرنے اس کی جانب بڑھے تھے اب اس کے سر پر اوشن کوئین کا تاج دیکھ کر اس کے پیروں میں جھکے ہوئے تھے۔ 

عائش اور روز مایا وش تک آئے تھے۔ روز نے عائش کو سہارا دے رکھا تھا۔ تبھی پانی میں طوفان سا آیا۔ اور اس پانی کے ٹورنٹو کے اوپر تاشہ مکروہ قہقہے لگاتی دکھائی تھی۔ 

تو جس لمحے کا انتظار کیا تھا وہ آ ہی گیا،، مجھے میرے آقا کو خوش کرنے کے لیے اس کے جی بہلانے کا سامان مل ہی گیا،، وہ تم ہو تم،،، جو میرے آقا کو چاہیے ہو،،، ہے ناں

وہ غدار تو تھی ہی۔ آج یہ بھی پتہ چلا کہ اس کے پاس اتنی شیطانی پاورز کہاں سے آئیں کہ وہ اوشن کوئین ایلا کو شکست دے گئی۔ 

مایا وش کے سکون میں رتی برابر بھی فرق نہیں پڑا تھا جبکہ وہ ہنوز بکواس کیے جا رہی تھی۔ 

اب ہوگا اصل کھیل شروع،جب ہمارا ہر مقصد پورا ہوگا،، میں اوشیانہ کے تخت پر راج کروں گی ہمیشہ ہمیشہ کےلئے،،، اور تم جاؤ گی میرے آقا کے پاس،، اب چلتی ہو یا بالوں سے گھسیٹ کر لے جاؤں

وہ منہ سے جھاگ اڑانے لگی۔ 

کوشش کر کے دیکھ لو مجھے گھسیٹنے کی
مایا وش نے اطمینان سے کہا۔ 

تاشہ نے اپنا ترشول مایا وش کی جانب کیا۔ اس میں سے بجلی کا ایک کوندا سا لپکا۔ جو مایا وش تک آیا۔ مگر مایا وش سے ٹکرا کر پلٹا اور سیدھا جا کر تاشہ کو بجا۔ 

اس کا ترشول پھٹ کر ریزہ ریزہ ہوا تھا۔ جبکہ تاشہ کئی فٹ دور جا کر گری۔ اٹھنا مشکل تھا ۔ وہ اوشن کوئین پر وار کر کے الٹا اپنی ساری طاقت گنوا بیٹھی تھی۔ 

اپنی سزا خود تجویز کر لو تاشہ، اوشن کوئین نے تمہیں تمھاری غداری کی سزا دی تو زیادہ دردناک ہوگی 

مایا وش کا لہجہ سرسراتا سا تھا۔ تاشہ کے چہرے پر ہوائیاں اڑنے لگیں۔ وہ جو بھاگ نکلنے کا سوچ رہی وہ آکٹوپس جو اس کے حکم کے مطابق یہاں پہرہ دے رہے تھے۔ انھوں نے ہی تاشہ کو بری طرح دبوچ کر اپنے قبضے میں لے لیا۔ 

میری طرف مت دیکھیں اوشن کوئین،، اس غدار کا انجام بلکل ویسا ہی ہونا چاہیے،، جیسا کہ اوشیانہ کے ہر غدار کا ہوتا ہے،، میری بلکل پرواہ مت کریں،، میری ماں تو اسی دن مر گئی تھی جب اس نے مجھ پر اور میرے پرنس پر وار کیا تھا،، اب تو میرے سامنے ایک ایسی لالچی عورت ہے جسے محض تخت چاہیے اور کوئی رشتہ کوئی چیز نہیں 
روز نے اذیت کی انتہا سے کہا تھا۔ 

یہ نہیں ہو سکتا،، تم ،،تم تبھی اتنی طاقتور ہو سکتی ہو جب تمھاری کوکھ میں اوشیانہ کا اگلا تخت نشین ہو ،،، ایسا نہیں ہو سکتا،، تم مجھے نہیں ہرا سکتیں،، کوئی بھی تاشہ کوئین کو شکست نہیں دے سکتا،، میں مار ڈالوں گی تم سب کو،،، 

وہ شاید اپنی شکست سامنے دیکھ کر پاگل ہو چکی تھی اور ان کی جانب لپکنے لگی۔ 

لے جاؤ اسے اور سزا کے طور پر سر قلم کر دو اس کا
مایا وش نے اوشن کوئین ہونے کے ناطے اپنا پہلا فیصلہ سنایا۔ 

تاشہ نے روز کی جانب دیکھا۔ مگر اس نے بے تحاشا روتے عائش کے سینے میں منہ دے لیا۔ وہ آکٹوپس تاشہ کو لے گئے۔ 

مایا وش نے مسکرا کر عائش اور روز کو دیکھا جو اس کے سامنے گھٹنوں کے بل جھکے تھے۔ 
اوشن کوئین
مایا وش نے جھک کر ان کر سروں پر ہاتھ رکھا۔ انھیں اٹھایا اور اپنے گلے سے لگایا۔ 

چلو یہاں سے،،،مایا وش نے عائش کی زخمی ہوئی حالت دیکھ کر پانی کی جانب دیکھا۔ وہ وہیل فش پھر سے ساحل کے قریب آئی۔ 

وہ ان پر سوار ہوئے اور اوشیانہ کی جانب گامزن ہوئے۔ 

نیچے دئے ہوئے آنلائن آپشن سے پوری قسط پڑھیں۔


Online Reading Last Episode 

Post a Comment

1 Comments